شہنشاہ غزل مہدی حسن 41

شہنشاہ غزل مہدی حسن کو 91 ویں سالگرہ پر گوگل نے کیا تحفہ پیش کیا؟ آپ نے کبھی سوچا بھی نہ ہوگا

برصغیر کے عظیم غزل گو مہدی حسن کے مداح آج اُن کی 91 ویں سالگرہ منا رہے۔ اس موقع پر معروف سرچ انجن گوگل نے مہدی حسن کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لئے اپنا نیا ڈوڈل غزل کے شہنشاہ کے نام کر دیا ہے۔

شہنشاہ غزل مہدی حسن بھارت کے شہر راجستھان میں 18 جولائی 1927 میں پیدا ہوئے۔ مہدی حسن کا تعلق موسیقی کے کلاونت گھرانے کی سولہویں نسل سے تھا۔ مہدی حسن نے فن موسیقی کا آغاز 1952 میں ریڈیو پاکستان کراچی سے کیا جبکہ 5 سال محنت کی بدولت 1957 کو پہلی بار ریڈیو پاکستان ہی سے ایک ٹھمری گائی جسے بے حد سراہا گیا۔ اس کے بعد مہدی صاحب نے پیچھے مڑ کر نہیں دیکھا۔

کئی دہائی کے سفر میں مہدی حسن خان نے تقریبا ً 440 فلموں کے لیے گانے گائے جن میں گیتوں کی تعداد لگ بھگ 623 ہے۔ اس کے علاوہ انھوں نے 366 اردو فلموں میں 541 اور 74 پنجابی فلموں میں 82 گیت گائے۔ فلمی گیتوں میں ان کے 100 سے زیادہ گانے صرف اداکار محمد علی پر فلمائے گئے۔
مہدی حسن نے اپنی کیریئر کا پہلا فلمی گیت ’جس نے میرے دل کو درد دیا‘ 1962 میں ریلیز ہونے والے فلم ’سسرال‘ میں گایا تھا، جسے بے حد پسند کیا گیا۔ انھوں نے مجموعی طور پر 50 ہزار سے زائد فلمی وغیر فلمی گیت، نغموں اور غزلوں میں آواز کا جادو جگایا۔
شہنشاہ غزل مہدی حسن

انھیں بھارت کے سب سے بڑے ثقافتی ایوارڈ سہگل ایوارڈ سے نوازا گیا تھا جبکہ بھارتی گلوکارہ لتا منگیشکر نے مہدی حسن کے گلے کو “بھگوان کا گھر” قرار دیا۔

مہدی حسن کی فنی خدمات کے اعتراف میں حکومت پاکستان نےاُنہیں صدارتی تمغہ حسن کارکردگی، تمغہ امتیاز اور ہلال امتیاز سے نوازا جبکہ حکومت نیپال نے مہدی حسن کو گورکھا دکشنا بہو کا اعزاز عطا کیا۔ مہدی حسن کا انتقال 13 جون 2012ء کو کراچی میں ہوا جہاں وہ آسودہ خاک ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں