597ec82c9a730 72

شہباز شریف کے بعد حمزہ شہباز کی باری،نون لیگ کے لیے ایک اور بری خبر آگئی

غیر قانونی مداخلتوں کی رپورٹیں ثبوتوں کے ساتھ تیار ہونے لگیں، متعدد ٹھیکیدار اور افسران وعدہ معاف گواہ بننے کو تیار
لاہور:شہباز شریف کے بعد حمزہ شہباز کے گرد بھی شکنجہ کس لیا گیا۔غیر قانونی مداخلتوں کے خلاف متعدد ٹھیکیدار اور افسران وعدہ معاف گواہ بننے کو تیار ہو گئے۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز مسلم لیگ ن کے صدر اور اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کو نیب عدالت میں پیش کر دیا گیا ۔ شہباز شریف نے مقدمے کی سماعت کھُلی عدالت میں پیش کرنے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ میں چیمبر میں سماعت نہیں کروانا چاہتا۔
جس پر احتساب عدالت کےجج نجم الحسن نے ان کا مطالبہ منظور کرتے ہوئے کھُلی عدالت میں سماعت شروع کر دی۔ سماعت کے دوران نیب کے وکیل نے شہباز شریف کا 15 روزہ ریمانڈ حاصل کرنے کی استدعا کی جس کی شہباز شریف کے وکیل نے مخالفت کر دی۔تاہم عدالت نے نیب کو شہباز شریف کے 10 روزہ جسمانی ریمانڈ دے دیا۔
دوسری جانب خبر یہ ہے کہ شہباز شریف کے بعد حمزہ شہباز کے خلاف بھی شکنجہ کس لیا گیا ہے۔

حمزہ شہباز شریف کے خلاف بھی غیر قانونی مداخلتوں کے ثبوتوں کے ساتھ رپورٹس تیار ہونے لگیں۔کئی ٹھیکیدار اور بیورکریٹس خود کو بچانے کے لیے وعدہ معاف گواہ بننے کو تیار ہوگئے۔نیب کی کاروائیوں سے قبل بیوروکریسی شش و پنج میں تھی تاہم اب بیوروکریسی نےبھی نیب کا ساتھ دینے کا فیصلہ کرلیا ہے۔اہم بیوروکریسی ذرائع کا کہنا ہے کہ شہباز شریف کے دور میں غیر قانونی مداخلتوں کے ثبوت موجود ہیں ۔
صوبے میں کوئی تقرری وزیر اعلیٰ کی مرضی کے بغیر نہیں ہوتی تھی۔تقرریوں کی فہرستیں بھی وزیر اعلیٰ ہاوس سے آتی تھیں۔تمام اداروں پرحمزہ شہباز کا ہولڈ تھا۔۔حمزہ شہباز کی جانب سے لگائے گئے ٹھیکداروں کا کام چیک کرنے کی اجازت متعلقہ افسران کو بھی نہ تھی بلکہ افسران منصوبے کے چیک بھی متعلقہ ٹھیکیداروں کے گھر خود دے کر آتے تھے۔اس حوالے سے امید ظاہر کی جارہی ہے کہ جلد ہی کوئی بڑا قدم اٹھایا جانے والا ہے۔

کیٹاگری میں : نام

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں