Damambarsha and Mohmand Dam 35

دیامربھاشا اور مہمند ڈیم کے لیے سرچارج عائد کرنے پر غور

اسلام آباد: (دنیا نیوز) حکومتیں ڈیم اپنی جیب سے تو نہیں بناتیں، اس کے لیے فنڈز عوام کے ٹیکس سے جاتے ہیں۔ اب نیلم جہلم کے بعد دیامربھاشا اور مہمند ڈیم کے لیے سرچارج عائد کرنے پر غور کیا جا رہا ہے۔

چیف جسٹس کی کوششوں سے دیامربھاشا اور مہمند ڈیم کیلئے 26 کروڑ روپے جمع، فنڈز جمع کرانے کا سلسلہ جاری، بجلی کے بلوں میں ڈیم سرچارج لگانے کی تیاری، سرچارج کتنا اور کب سے لگے گا؟ یہ فیصلہ کرے گا نیپرا۔

دیامربھاشا اور مہمند ڈیم عملدرآمد کمیٹی کے اجلاس کے بعد چیئرمین واپڈا نے میڈیا کو بتایا کہ دو ڈیم بنانے کے لیے کام کی رفتار تیز کر دی ہے۔ چیئرمین واپڈا کا کہنا تھا کہ گلگت بلتستان پاکستان کا حصہ ہے اور دیامربھاشا ڈیم کی زمین متنازع نہیں ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں