During the meeting of the Salim League (N) leader 0

سلم لیگ (ن) کے رہنما کو کارنر میٹنگ کے دوران عوام نے گھیر لیا

فیصل آباد(اردو پیپر)مسلم لیگ (ن) کے رہنما اور سابق وزیرِ مملکت برائے خزانہ رانا افضل کو کارنر میٹنگ کے دوران عوام نے گھیر لیا۔تفصیلات کے مطابق انتخابی مہم کے دور ان بعض سیاستدانوں کو عوام کے اشتعال کا سامنا کرنا پڑا۔ عوامی عدالت اور سوالات کا سامنا کرنے والے سیاستدانوں میں چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری، سابق وفاقی وزیرقانون زاہد حامد، ایم کیوایم پاکستان کے رہنما فاروق ستار، تحریک انصاف کے عارف علوی اور خرم شیرزمان بھی شامل ہیں۔
ضرور پڑھیں:معصوم سالی سے زیادتی کرنے والے درندہ گرفتار

سابق وزیرمملکت برائے خزانہ رانا افضل کو اسی طرح کی صورتحال کا سامنا چک نمبر 119 میں کرنا پڑ گیا جب ان کی تقریر کے بعد ووٹر نے ہاتھ پکڑنے کی کوشش کی اور شکایت کی کہ آپ نے ہمارے علاقہ میں کوئی کام نہیں کیا، جس پر رانا افضل نے جواب دیا کہ بہت سارے کام نہیں بھی ہوتے ،ْاس دوران رانا افضل کے حامیوں نے نوجوان کے منہ پر ہاتھ رکھ کر پنڈال سے باہر نکال دیا اور مبینہ طور پر نوجوان پر تشدد بھی کیا گیا۔دو روز قبل بھی رانا افضل کے حلقے کے عوام نے انہیں گھیر کر سوالات کی بوچھاڑ کردی تھی، عوام کا کہنا تھا کہ ہم سابق وزیرمملکت کے ڈیرے پر گئے تھے لیکن انہوں نے کہا ہم آپ کو نہیں جانتے، جو ایم این اے گھر آئے ہوئے شخص کو پانی نہیں پلا سکتا وہ ہمارے لئے کیا کرے گا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں