funny urdu poetry for students 33

فنی اور اداس شاعری funny urdu poetry for students

بلھے شاہ اساں جوگی ہوئے ساڈے سپّاں نال یارانے

ساڈے انگ انگ وچ زہراں چڑھیا ساڈا درد کوئی نہ جانے


بابا جی کہتے ہیں کہ اگر لڑکیاں بابا کی پریاں ہیں تو
لڑکے بهی بابا کے ہیلی کاپٹر ہیں😂😂😂


ایک شعر پیش خدمت ہے

اُسے کہنا؛؛؛؛؛؛؛؛؛؛؛؛؛
بلکہ رہنے دینا میرا چکر لگے گا
تو میں خود ہی کہہ دوں گا

بہت شکریہ😂😂😂😂😝

#یونیک_شاعر


کچھ لڑکیوں کا بس چلے تو اپنی شادی پہ بھی پھڈا ڈال لیں 😛😛
میں نئیں لینا اے دولہا 😛
میرے کپڑیاں نال میچ نئیں کر دا
😂😂😂😂😂


ایسے ممبرز کو شاپر میں ڈال کر ہینگر پہ لٹکا دینا چاہیے___√√ 😕😒😏

جو گروپ تو جوائن کرتے ہیں لیکن پوسٹ نہیں کرتے…😠😝😝😂😂


اُس کا آخری میسج آیا

بارات آگئی ہے اگر پیسے لوٹنے ہیں تو آجاٶ😂
اے ہوندیاں نے سچیاں محبتاں.😜


بچھڑ گیا ہے کہیں در بدر نہ ہو جاۓ..
.
میرے خدا اسے حفظ و امان میں رکھنا…


یقین تو نہیں کے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ تم یاد کر سکتے ہو

لیکن یہ ہچکیاں وہم میں ڈال رہی ہیں مجھے


بہت سی خواہشوں میں سے (جو بے مراد رہ گئیں)
تمہارے ساتھ بارشوں میں بھیگنا بھی ایک تھی


تیرے بغیر دنیا کو ..

ہم ویران لکھتے ھیں


یادوں کا حساب رکھ رھا ھوں
سینے میں عذاب رکھ رھا ھوں


وہ مجھے اچھا یا برا نہیں لگتا

وہ مجھے بس “میرا” لگتا ہے”


نرمی و گرمی گفتار کا حق بنتا ہے…

وہ مرا یار ہے, اور یار کا حق بنتا ہے


اب کس سے جا کے دل کی پریشانیاں کہوں​

ہر شخص کہہ رہا ہے کہ اچھے بھلے تو ہو​


تعلق ختم کرنے کا اختیار تھا ان کو بے شک،

پر وہ جو بنا رہے تھے وہ بہانے عجیب تھے💝


اب مری راہ میں حائل نہیں ہوتی یادیں

اب ترے شہر سے گزروں تو گزر جاتا ہوں


احباب کا کرم ہے کہ خود پر کھُلا ہوں میں
‏مجھ کو کہاں خبر تھی کہ اتنا برا ہوں میں


ﮐﯿﺎ ﮨﻢ ﮨﯽ ﺳﺪﺍ ﺍُﺱ_ ﮐﮯ ﻭﻓﺎﺩﺍﺭ ﺭﮨﯿﮟ ﮔﮯ ؟

ﮐﯿﺎ ﺻﺮﻑ ﮨﻤﺎﺭﮮ ﮨﯽ ﻧﻮﺍﻟﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﻧﻤﮏ ﺗﮭﺎ __؟


ہر ســـــــزا قبـــــــو ل کی ســـــــر جُھکا کے ہم نے۔۔۔

قصـــــــور بس اتنا تھـــــــا کہ بے قصـــــــور تھےہم۔۔۔


نہ جلاؤ، نہ دفناؤ، سرعام سڑک پرپھینک دو
یہ عشق سبھی کا مجرم ہے ہر آتا جاتا بدلہ لے.. .


اسے کہو کہ ذرا پھر سے وہ کہانی سنائے___!

جس میں شہزادہ محبت کی خاطر فقیر بنا تھا___!


خدا کرے،،،،،،،،،، وہ ملے اور فاصلہ نہ رہے
پھر اس کے بعد بچھڑنے کو راستہ نہ رہے…..


‏نہ جانے کون سی سازشوں کا ہم شکار ہو گئے ….!!

کے جتنے صاف دل تھے اتنے داغ دار ہو گئے …..؟؟


علاج عشق جو پوچھا میں نے طبیت

سے۔۔۔۔۔!!!!؟؟

دھیمے سے لہجے میں بولا زہر پیا کرو۰


جن کے جانے سے جان جاتی تھی
ہم نے ان کو بھی جا تے دیکھا ہے۔


نہ گلہ رہے، نہ گماں رہے، نہ گزارشیں ہیں نہ گفتگو

وہ نشاطِ وعدہ وصل کیا ہمیں اعتبار بهی اب نہیں


تو “زبر” میں “زیر” سائیں…

تو حکم کر میں “پیش” سائیں…😯😯


نظر چرا کے کہا ، بس یہی مقدر تھا !

بچھڑنے والے نے ملبہ خدا پہ ڈال دیا


حضور میری صداؤں پہ غور تو کیجئے….!!!

فقیر یہ تو نہیں کہتا کے گلے لگا لیجئے….!!! 🙏🏻


شانوں پہ کس کے اشک بہایا کریں گے آپ..؟؟؟
روٹھے گا کون ؟ کس کو منایا کرینگے آپ…؟؟؟


اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں