poems political 0

سیاسی شاعری، Political poetry

اے چاند یہاں نا نکلا کر ،
بے نام سے سپنے دکھلا کر ،

یہاں الٹی گنگا بہتی ہے ،
اس دیس میں اندھے حاکم ہیں ،

نا ڈرتے ہیں نا نادم ہیں ،
نا لوگوں کے وہ خادم ہیں ،

ہے یہاں پر کاروبار بہت ،
اس دیس میں گردے بکتے ہیں ،

کچھ لوگ ہیں عالی شان بہت ،
اور کچھ کا مقصد روٹی ہے ،

وہ کہتے ہیں سب اچھا ہے ،
اور کفر کا راج ہی سچا ہے ،

یہ دیس اندھے لوگوں کا ،
اے چاند یہاں نا نکلا کر . . . . . . ! ! ! ! ،

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں