pti-govt 43

حکومت آئی ایم ایف کے بعد کس سے قرض مانگنے جا رہی ہے؟ جان کر آپ بھی اپنے غصے کو قابو میں نہیں رکھ پائیں گے.

اسلام آباد(اردو پیپر) پاکستان میں سرکولر ڈیڈ کو بہتر کرنے اور ملکی معشیت کو سہارا دینے کے لیے حکومت آئی ایم ایف سے قرض مانگنے کی تیاری کے بعد اب ورلڈ بنک سے بھی قرض کے حصول کے لیے رابطہ کرنے کا ارادہ رکھتی ہے. پاکستان میں اس وقت سب سے بڑا مسئلہ کرنٹ اکاؤنٹ ڈیفسٹ کا ہے جو تقریبا پچھلے دو سے تین سال میں ایک تواتر کے ساتھ بڑھ رہا ہے.

ضرورپڑھیں:چیف جسٹس نے حکومت کو کچی آبادیوں سے متعلق ایسا حکم جاری کردیا کہ غریبوں کے چہروں پر رونق لوٹ آئی
تفصیلات کے مطابق حکومت ان مسائل سے نکلنے کے لیے قرض لینے پر مجبور ہے جس پر حکومت کو مشکلات کا بھی سامنا ہے. اپوزیشن کا کہنا ہے کہ دعوی کیا گیا تھا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کسی بھی صورت آئی ایم ایف کے پاس قرض لینے گئی تو ہم مستعفی ہو جائیں گے، جس پر اب وزیراعظم عمران خان سے استعفی کا بھی مطالبہ کیا جا رہا ہے. ذرائع کے مطابق حکومت ملکی معشیت کو سہارا دینے میں شدید مشکلات کا شکار بھی ہے. جس کی وجہ سے ڈالر کی قیمت میں بھی اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں