DkRkWJaW4AAN8l9 69

ترکی کو امریکہ سے تنازع مہنگا پڑ گیا، روپے کی قدر میں ریکارڈ کمی

انقرہ: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے ترک مصنوعات پر اضافی محصولات کا بیان ترک کرنسی پر اثر انداز ہونے لگا، لیرا کی قدر میں ریکارڈ کمی دیکھی گئی۔

تفصیلات کے مطابق گذشتہ دنوں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے یہ اعلان کیا تھا کہ وہ ترکی سے امریکا میں دھاتوں اور دھاتی مصنوعات کی درآمدات پر عائد کردہ محصولات کو دوگنا کر رہے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکا کی جانب سے ترک مخالف بیان کے بعد ترک کی کرنسی لیرا بری طرح متاثر ہوئی ہے، جس کی قدر میں ریکاڑ کمی دیکھنے میں آئی ہے۔

خیال رہے کہ ترکی اور امریکا کے درمیان کئی دنوں سے ایک ایسا تنازع کافی شدت اختیار کر چکا ہے، جس کی وجہ ماضی قریب میں ترکی میں ایک امریکی پادری کی گرفتاری بنی تھی۔
Turkey-featured

امریکا دھمکیوں سے باز نہ آیا تو ترکی بھی اپنے مؤقف پر ڈٹ جائے گا
ترکی میں گرفتار امریکی پادری پر یہ الزام ہے کہ وہ ترکی میں دہشت گرد کارروائیوں میں ملوث ہے، تاہم امریکا نے مذکورہ الزامات کی تردید کی ہے۔

قبل ازیں امریکی صدر ٹرمپ اپنے ایک بیان میں یہ بھی کہہ چکے ہیں کہ وہ ترکی سے امریکا درآمد کی جانے والی فولاد کی مصنوعات پر 20 فیصد اور المونیم کی مصنوعات پر 50 فیصد اضافی محصولات کے نفاذ کا حکم دے رہے ہیں۔

مزید پڑھیں:کیا کپتان پھر ورلڈ کپ کی فاتح ٹیم کی قیادت کریں گے: تفصیلات سامنے آگئیں

دوسری جانب ترک صدر رجب طیب اردگان نے ملکی عوام سے کہا ہے کہ وہ ترکی کے اقتصادی دشمنوں کے خلاف ’قومی جنگ‘ کے لیے خود ٹرکش کرنسی لیرا خریدیں، ان کا یہ بیان ترکی کرنسی کی قدر میں کمی کے بعد سامنے آیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں